راجو بانگڑو قتل معاملے میں اس کا سالا گرفتار

مالیگاوں (نامہ نگار) 28 مئی : گزشتہ کل رات ساڑھے گیارہ بجے مالدہ شیوار علاقے کی زیتون مسجد کے پاس کمال پورہ کے محمد شاہد محمد سلیم عمر 42 سال اس نوجوان کا کل رات کو قتل ہوگیا تھا ، رات 12 بجے پوارواڑی پولس نے نعش کو اپنے قبضے میں لیکر اس نعش کا پوسٹ مارٹم کیا ، آج راجو بانگڑو کی نعش کمالپورہ میں واقع ان کے گھر روانہ کی گئی۔ مزکورہ معاملے میں پوار واڑی پولس عملہ نے راجو بانگڑو کی دوسری بیوی کے بھائی سعود مشیر اخلاق احمد ماسٹر اس نوجوان کو گرفتار کیا ہے ۔پوارواڑی پولس اسٹیشن میں اس گناہ کا اندراج نمبر 1/153/2020 ہے ، معلوم ہو کہ پولس نے دفعہ 302 کے تحت مقدمے کا اندراج کیا ہے ۔اس معاملے میں سعود اخلاق احمد نامی ایک ہی ملزم ہے جسے رات میں ہی پولس نے اپنی حراست میں لے لیا تھا ۔ تفصیلات کے مطابق راجو بانگڑو کی پہلی بیوی کمالپورہ میں رہتی تھی ابھی گزشتہ دو سال قبل اس نے سعود مشیر اخلاق احمد کی بہن سے شادی کی تھی ، شادی کے بعد سے ہی روزانہ دونوں کی آپس میں ان بن رہا کرتی تھی ، ملزمین کے متعلقین کی جانب سے بتایا گیا راجو بانگڑو روزانہ شراب پی کر ان کے مکان میں جاتا اور اپنی بیوی ، اپنے سالوں ، اپنے سسر اور اپنی ساس کے ساتھ مارپیٹ کیا کرتا تھا ۔ گلی کے لوگ روزانہ کے اس ظلم ستم سے پریشان ہوگئے تھے ، بتا دیں کہ گزشتہ کچھ روز قبل راجو بانگڑو نے اپنے سسر اخلاق احمد کی آٹو رکشا کو بھی نظر آتش کردیا تھا اور گھر میں کئی افراد کو مار کر انہیں زخمی بھی کردیا تھا ۔واضح رہے کہ راجو بانگڑو کا سالا اور ان کا خانوادہ کوئی کریمنل فیملی نہیں ہے ۔مگر راجو بانگڑو کی بلاوجہ مارپیٹ اور دادا گری سے یہ لوگ اس قدر پریشان ہوگئے تھے کہ رمضان مہینہ گزرتے ہی اس کا سالا سعود مشیر اخلاق احمد نے روز کے ظلم و ستم سے تنگ آکر کل رات تیز دھار ہتھیار سے راجو بانگڑو کے گلے پر وار کر کے اس کا قتل کردیا ۔ملی اطلاع کے مطابق قتل کے بعد سعود مشیر کہیں نہیں گیا بلکہ وہ اپنے گھر میں ہی تھا ، قتل کے کچھ دیر بعد ہی پوارواڑی پولس عملہ نے اس کو گرفتار کرلیا تھا ۔


شہر کی تمام اہم خبروں کو بروقت پڑھنے کے لئے ڈاؤنلوڈ کریں سچ بات نیوز ایپ


Related Articles

Back to top button
Don`t copy text!
Close